10

کے پی کابینہ نے 20 گاڑیوں کی بلٹ پروفنگ کے لیے 18 کروڑ روپے کی منظوری دے دی۔

پشاور: خیبرپختونخوا کابینہ نے منگل کو اپنے آخری اجلاس میں صوبے کے 20 حساس اضلاع کے لیے 20 گاڑیوں کی بلٹ پروفنگ کے لیے 180 ملین روپے کے ضمنی بجٹ کی منظوری دی۔

صوبائی کابینہ کے اجلاس میں شرکت کے بعد پریس کانفرنس میں کابینہ کے فیصلوں کے بارے میں بات کرتے ہوئے وزیر تعلیم شہرام تراکئی نے کہا کہ وزیراعلیٰ محمود خان کی زیر صدارت صوبائی کابینہ نے اپنے 86ویں اجلاس میں مختلف کیڈرز کی اپ گریڈیشن کے حوالے سے بہت انتظار کا فیصلہ کیا۔ اسکول کے اساتذہ

وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی برائے اطلاعات بیرسٹر محمد علی سیف بھی ان کے ہمراہ تھے۔

شہرام نے کہا کہ یہ فیصلہ ایک قابل ذکر ہے اور اس سے صوبے میں تعلیم کے فروغ میں بہت مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس فیصلے سے تقریباً 130,000 اساتذہ مستفید ہوں گے، جو اس سال جولائی میں عملی طور پر نافذ ہو جائے گا۔

جب وزیر کو اس فیصلے کے مالی اثرات اور صوبائی حکومت کی واضح سیاسی چالوں کے بارے میں یاد دلایا گیا تو شہرام نے کہا کہ انہوں نے اپنے دور حکومت میں تعلیم میں بہت زیادہ سرمایہ کاری کی اور اگلی حکومت بھی بنائیں گے۔

وزیر نے کہا کہ کابینہ نے سیکنڈری اسکول ٹیچرز (SST) اور پرائمری اسکول ٹیچرز (PST) کی اسامیوں کو بالترتیب BPS-16 سے BPS-17 اور BPS-12 سے BPS-14 میں اگلے مالی سال سے اپ گریڈ کرنے کی منظوری دی ہے۔ . ان آسامیوں کی اپ گریڈیشن، جو کہ اساتذہ برادری کا دیرینہ مطالبہ تھا، سے صوبے کے 21,800 SSTs اور 51,000 PSTs کو فائدہ پہنچے گا۔ اسی طرح سرٹیفائیڈ ٹیچرز (CT)، ڈرائنگ ماسٹر (DM)، AT اور فزیکل ایجوکیشن ٹیچر (PET) کی پوسٹوں کو بھی BPS-15 سے BPS-16 میں اپ گریڈ کر دیا گیا ہے تاکہ ان کی اپ گریڈ شدہ سکیلوں کی مانگ کو پورا کیا جا سکے۔

اسی طرح، اساتذہ کے لیے ایک چار درجے کا فارمولہ بھی منظور کیا گیا تاکہ BPS-17 سے BPS-20 تک کے مختلف سکیلوں میں کام کرنے والے 13,888 اساتذہ کی ترقی کی راہ ہموار کی جا سکے۔ انہوں نے بتایا کہ کابینہ نے پشاور پریس کلب اور سوات پریس کلب کے لیے بالترتیب 50 ملین روپے اور 20 ملین روپے کی یک وقتی نقد گرانٹ کی منظوری بھی دی ہے۔ اسی طرح نوشہرہ پریس کلب کے لیے 50 لاکھ روپے کی گرانٹ کی منظوری دی گئی۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں