14

پی ٹی آئی کے ایم پی اے ربستان خان کو ایل جی الیکشن تشدد کیس میں جیل بھیج دیا گیا۔

کراچی: ایک عدالت نے پیر کو پاکستان تحریک انصاف کے ایم پی اے ربستان خان کو جیل بھیج دیا، جنہیں اتوار کو گلشن معمار کے علاقے میں بلدیاتی انتخابات کے دوران تشدد میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

گلشن معمار تھانے کی حدود میں ایک پولنگ اسٹیشن کے باہر پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار اور ان کے حامیوں کو مارنے کے الزام میں خان کے ساتھ پارٹی کے 50 کے قریب کارکنوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

تفتیشی افسر نے زیر حراست قانون ساز کو جوڈیشل مجسٹریٹ (ویسٹ) کے سامنے پیش کیا اور تفتیش کے لیے ان کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست کی۔ دو درجن افراد، جس کی وجہ سے وہ بیمار محسوس کر رہے تھے اور انہیں طبی علاج کی ضرورت تھی۔ مجسٹریٹ نے تفتیشی افسر کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ایم پی اے کو جیل بھیج دیا اور ان کا علاج کرانے کا حکم دیا۔

خان اور دیگر کے خلاف دفعہ 324 (قتل کی کوشش)، 337-A (شجاع کی سزا)، 171-ایف (انتخابات میں غیر ضروری اثر و رسوخ یا شخصیت کی سزا)، 365 (اغوا)، 511 (کوشش کی سزا) کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی۔ پی پی پی کے امیدوار ہلال رحمانی کی شکایت پر پاکستان پینل کوڈ (پی پی سی) کے 504 (امن کی خلاف ورزی کے ارادے سے جان بوجھ کر توہین) اور عمر قید یا اس سے کم مدت کے لیے سزا یافتہ جرائم کا ارتکاب کرنا۔

دریں اثنا، مشرقی ضلع کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے پی ٹی آئی کے ایک اور قانون ساز، عدیل احمد کی ضمانت منظور کر لی، جسے شاہ فیصل کالونی میں ایک پولنگ سٹیشن پر پریزائیڈنگ افسر سے بیلٹ پیپر چھیننے کی مبینہ کوشش کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

اس کے خلاف پی پی سی کی دفعہ 171 (سرکاری ملازم کی طرف سے دھوکہ دہی کے ارادے سے استعمال کیا جانے والا لباس پہننا یا ٹوکن لے کر جانا) اور 382 (چوری کے ارتکاب کے لیے موت، چوٹ یا روک تھام کی تیاری کے بعد چوری) کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی۔ شاہ فیصل پولیس نے یہ مقدمہ کورنگی ڈسٹرکٹ کے فوکل پرسن برائے بلدیاتی انتخابات کی شکایت پر درج کیا۔

مجسٹریٹ نے انہیں رہائی کے لیے پچاس ہزار روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی۔سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ بھی گرفتار قانون سازوں سے اظہار یکجہتی کے لیے سٹی کورٹس پہنچے۔

اس کے علاوہ انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے انتظامی جج نے پریزائیڈنگ افسر کو مارنے اور بیلٹ چھیننے کے الزام میں زیر حراست پی ٹی آئی امیدوار امجد آفریدی اور ان کے دو بھائیوں کا دو روزہ پولیس ریمانڈ منظور کر لیا۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں