8

پی ٹی آئی کے ایم این ایز کو چیف جسٹس، سپریم کورٹ رجسٹرار سے ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی۔

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اراکین قومی اسمبلی (ایم این اے) کو منگل کو چیف جسٹس آف پاکستان سے ملنے کی اجازت نہیں دی گئی جب کہ سپریم کورٹ کے رجسٹرار نے بھی ان سے ملنے سے انکار کردیا، مقامی میڈیا نے ذرائع کے حوالے سے رپورٹ کیا۔

پی ٹی آئی کے آٹھ ایم این ایز سپریم کورٹ سے ملنے آئے تھے۔ پی ٹی آئی رہنما ملک عامر ڈوگر نے کہا کہ وہ قومی اسمبلی سے استعفوں پر چیف جسٹس سے ملاقات کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے ان کے استعفے قبول کر لیے ہیں، جب سپریم کورٹ نے انہیں اسمبلی میں واپس جانے کو کہا۔

قبل ازیں سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف نے تحریک انصاف کے مزید 43 ایم این ایز کے استعفے منظور کر لیے تھے۔ واضح رہے کہ ریاض فتیانہ، طالب نکئی، یعقوب شیخ، سنیلہ رتھ، غزالی کیفی، فاروق اعظم، نفیسہ خٹک، طاہر صادق، صاحبزادہ محمد محبوب سلطان، حاجی امتیاز چوہدری، ظل ہما، نوشین حامد، غلام بی بی بھروانہ کے استعفے قبول کر لیا گیا ہے.

23 جنوری کو پی ٹی آئی کے ایم این ایز نے استعفے واپس لے لیے تھے جس کے بارے میں اسپیکر قومی اسمبلی کو ای میل اور واٹس ایپ کے ذریعے آگاہ کیا گیا تھا۔ پی ٹی آئی نے اس معاملے پر ای سی پی کو خط بھی لکھا، جس میں استعفے واپس لینے سے متعلق آگاہ کیا گیا۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں