14

مردان شہر میں تجاوزات عروج پر

مردان: مردان شہر کے بازاروں میں تجاوزات کی بھرمار، ضلعی انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔

فٹ پاتھوں پر لگائے گئے سٹالوں اور دھکے مارنے کی وجہ سے بازاروں میں پیدل چلنے والے مکینوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

ایک دورے کے دوران دیکھا گیا کہ تجاوزات کرنے والوں نے بازاروں اور گول چکروں کی اکثریت پر قبضہ کر رکھا ہے جس سے ٹریفک میں خلل اور پیدل چلنے والوں کو تکلیف ہوتی ہے۔

شہر کے بینک روڈ، چارسدہ روڈ، اڈہ روڈ، مالاکنڈ چوک، پاکستان چوک، شاہدانو بازار، پار ہوتی، شمسی روڈ، سرفراز گنج بازار، دواسارو چوک اور دیگر بازاروں اور علاقوں پر تجاوزات نے تقریباً قبضہ کر رکھا ہے۔

تجاوزات کرنے والوں نے سڑکوں کے ساتھ ساتھ غیر قانونی سیٹ اپ بنا کر فٹ پاتھ پر اشیاء فروخت کے لیے رکھ دی ہیں جو کہ بازار میں آنے والے صارفین کے لیے پریشانی کا باعث ہیں۔

’’فٹ پاتھ یا تو مالکان یا دکاندار کرایہ پر لیتے ہیں،‘‘ رحمان، اے

رہائشی

ایک صارف یونس خان کا کہنا تھا کہ تجاوزات اس لیے بڑھ رہی ہیں کہ تجاوزات کرنے والوں کو بااثر افراد اور متعلقہ حکام کی پشت پناہی حاصل ہے۔

ایک گاہک محمد نعیم نے بتایا کہ تجاوزات کرنے والوں نے سڑک کے دونوں اطراف مختلف بازاروں اور چوکوں پر پھلوں اور سبزیوں کے سٹال بھی لگا رکھے ہیں جس سے پیدل چلنے والوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔

ایک رہائشی نور محمد نے بتایا کہ تین پہیوں کی غیر قانونی پارکنگ

مختلف چوراہوں پر لوگوں کے لیے مشکلات بھی پیدا ہو گئیں۔

مردان شہر کے مکینوں نے ڈپٹی کمشنر سے تجاوزات کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں