11

لو رنجن نے کھل کر بتایا کہ ان کی فلموں میں ہمیشہ خاتون اداکارہ ہی کیوں ‘مخالف’ ہوتی ہیں۔

لو رنجن پیار کا پنچنامہ سیریز اور سونو کی ٹیٹو کی سویٹی میں خواتین اداکاراؤں نے ولن کا کردار ادا کیا تھا۔
لو رنجن کی ‘پیار کا پنچنامہ’ سیریز اور ‘سونو کی ٹیٹو کی سویٹی’ میں خواتین اداکاراؤں نے ولن کا کردار ادا کیا تھا۔

لو رنجن اپنی فلموں میں اداکاراؤں کو ولن کے طور پر پیش کرنے کے لیے اپنا نقطہ نظر شیئر کرتے ہیں۔

ان کی فلمیں یعنی؛ پیار کا پنچنامہ 1 اور 2، سونو کی ٹیٹو کی سویٹی اور اب تو جھوٹھی میں مکڑ، ان تمام فلموں میں خواتین اداکارہ منفی کردار ادا کر رہی ہیں۔

سامعین اکثر اسی کے بارے میں سوچتے تھے اور اب لیو نے بالآخر اپنے مکتب فکر کا انکشاف کر دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا: "اور بھی فلم ساز ہیں جو ‘لڑکی سیدھی ہے لڑکا چلو ہے’ کے اسپیس میں اچھی فلمیں بنا رہے ہیں۔ ایک فلمساز کے طور پر مجھے اپنی فلموں اور اپنے ناظرین کے لیے ایک خاص نیا پن ہونا چاہیے۔”

"فلم میں جب تک ایک منفی اور ایک مثبت قوت نہ ہو تب تک فلم ناظرین کو مشغول نہیں کرے گی، یہ خالصتاً ایک تخلیقی فیصلہ ہے کہ میری فلموں میں کسی خاتون کو منفی کردار ادا کیا جائے۔”

ان کی تازہ ترین فلم میں تو جھوٹھی میں مکڑ، ٹریلر میں شردھا کپور کو منفی کردار میں دیکھا جا سکتا ہے۔ ان کی آخری فلم سونو کی ٹیٹو کی سویٹی کارتک آریان اور نصرت بھروچا کو دکھایا گیا جہاں نصرت نے ولن کا کردار ادا کیا۔

ٹی جے ایم ایم نے پانچ سال بعد لو رنجن کی پہلی فلم کو نشان زد کیا۔ اس روم کام میں رنبیر کپور مرکزی کردار ادا کریں گے۔ اس نے اسی طرح کا روم کام رول ادا کیا۔ یہ جوانی ہے دیوانی۔ رپورٹس کے مطابق اس فلم میں ڈمپل کپاڈیہ اور بونی کپور بھی اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ نیوز 18۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں