12

ای سی پی نے سندھ بلدیاتی انتخابات کے تازہ ترین نتائج کا اعلان کر دیا۔

کراچی میں 15 جنوری 2023 کو بلدیاتی انتخابات کے دوران ووٹ ڈالنے کے لیے ووٹرز پولنگ اسٹیشن کے باہر قطار میں کھڑے ہیں۔ — آن لائن
کراچی میں 15 جنوری 2023 کو بلدیاتی انتخابات کے دوران ووٹ ڈالنے کے لیے ووٹرز پولنگ اسٹیشن کے باہر قطار میں کھڑے ہیں۔ — آن لائن

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے منگل کو کراچی کے مقامی حکومتوں (ایل جی) کے انتخابات میں پارٹی کی تازہ ترین پوزیشنیں جاری کی ہیں – جو 15 جنوری کو منعقد ہوئے تھے – جو پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کو آگے اور جماعت اسلامی (جے آئی) کو دائیں بائیں دکھاتے ہیں۔ یہ.

ای سی پی کے نتائج کے اعدادوشمار کے مطابق پیپلز پارٹی نے 91 اور جماعت اسلامی نے 85 نشستیں حاصل کیں۔ جیو نیوز.

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے 42، پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) نے سات، جمعیت علمائے اسلام-فضل (جے یو آئی-ف) نے دو، اور تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) نے ایک نشست حاصل کی۔ ، تازہ ترین نتائج کے مطابق۔ ایک نشست بھی آزاد امیدوار نے حاصل کی۔

نتائج میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ ای سی پی نے 229 یونین کونسلوں میں چیئرمینوں اور وائس چیئرمینوں کے نتائج مرتب کر لیے ہیں۔

ای سی پی نے سندھ بلدیاتی انتخابات کے تازہ ترین نتائج کا اعلان کر دیا۔

تاہم ای سی پی کی جانب سے چھ یونین کمیٹیوں کے نتائج روکے گئے جس کے بعد کمیشن نے اس معاملے کی سماعت 25 جنوری کو کرنے کا فیصلہ کیا۔

نتائج میں مزید بتایا گیا ہے کہ امیدواروں کے انتقال کے باعث 11 نشستوں کے لیے انتخابات ملتوی کیے گئے تھے۔

ضلع وار بریک ڈاؤن

ضلع وسطی کی کل 41 نشستوں میں سے جماعت اسلامی نے 37 نشستیں حاصل کیں جبکہ پیپلز پارٹی نے چار اور پی ٹی آئی نے ایک نشست حاصل کی۔

ڈسٹرکٹ ایسٹ میں 42 نشستوں سے جماعت اسلامی نے 19، پی پی پی نے 14 اور پی ٹی آئی نے 9 نشستیں حاصل کیں۔

ضلع ملیر کی کل 30 نشستوں میں سے پیپلز پارٹی نے 20 اور پی ٹی آئی نے چار نشستیں حاصل کیں۔ جماعت اسلامی نے تین، مسلم لیگ ن نے دو، اور ایک آزاد امیدوار نے ایک نشست حاصل کی۔

ضلع غربی کی کل 25 نشستوں میں سے پی پی پی اور پی ٹی آئی دونوں نے نو نشستیں حاصل کیں جبکہ جماعت اسلامی نے پانچ اور جے یو آئی ف نے دو نشستیں حاصل کیں۔

ضلع جنوبی کی کل نشستوں کی تعداد بھی 25 تھی جس میں سے پی پی پی نے 15 اور پی ٹی آئی نو نے کامیابی حاصل کی، جب کہ ٹی ایل پی صرف ایک نشست حاصل کرنے میں کامیاب رہی۔

ضلع کورنگی سے جماعت اسلامی نے 21 اور پی ٹی آئی نے آٹھ، پی پی پی نے تین اور مسلم لیگ ن نے 34 نشستیں حاصل کیں۔

ضلع کیماڑی کی کل 31 نشستوں میں سے پیپلز پارٹی 26، مسلم لیگ ن تین اور پی ٹی آئی دو نشستیں حاصل کرنے میں کامیاب رہی۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں